Nazam سنو تم لوٹ آؤ نا

Discussion in 'اردو شاعری' started by Areeba, Jul 17, 2018.

  1. Areeba TraveleR of the NighT Fk Member

    Messages:
    2,242
    Likes Received:
    146
    Trophy Points:
    48
    سنو تم لوٹ آؤ نا
    تم بن دل نہیں لگتا
    کبھی تو رات نہیں ڈھلتی
    اور اکثر دن نہیں چڑھتا ------!

    بارونق شہر میں مجھ کو
    کچھ بھی اچھا نہیں لگتا
    مری اب آنکھیں دکھتی ھیں
    میں سکوں سے سو نہیں سکتی----

    سنو مرا تو بس نہیں چلتا
    میں باتیں چھوڑ دوں کرنی
    میں خوابوں کو زھر دے دوں
    میں آنکھیں نوچ لوں اپنی
    میں سانسیں روک دوں اپنی -----!

    مگر کچھ کر نہیں سکتی
    میں اتنی بے بس ھوں

    سنو تم لوٹ آؤ نا
    تم بن دل نہیں لگتا
    میں جینا تو چاھتی ھوں
    میں تم بن جی نہیں سکتی---!

    ....سنو !

    تم لوٹ آؤ نا ----
     

Share This Page