Others درِ خیرالوریٰ ہے اور میں ہوں

Discussion in 'اردو شاعری' started by intelligent086, Apr 6, 2019.

  1. intelligent086 FK Lover FK Lover Member Of The Month

    Messages:
    22,556
    Likes Received:
    2,639
    Trophy Points:
    98


    صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم
    درِ خیرالوریٰ ہے اور میں ہوں
    تمنا ہے دُعا ہے اور میں ہوں

    دیارِ مصطفیٰﷺ ہے اور میں ہوں
    دلِ شوق آشنا ہے اور میں ہوں

    مِلا ہے ، مل رہا ہے ، اور ملے گا
    عطائے مصطفیٰ ﷺ ہے اور میں ہوں

    زمانے میں نہ کوئی کام آیا
    اُنھیں کا آسرا ہے اور میں ہوں

    بہتر پھول آنکھوں میں کِھلے ہیں
    خیالِ کربلا ہے اور میں ہوں

    شہِ بغداد کا صدقہ عطا ہو
    لبوں پر یہ دُعا ہے اور میں ہوں

    مرے آقاﷺ مرے مولا! بچا لو
    کہ اک سیلِ بلا ہے اور میں ہوں

    درِ اقدس پہ حاضر ہوں سبھی ہم
    یہی اک مدعا ہے اور میں ہوں

    ندیمؔ اُن کا ہی نام آتا ہے لب پر
    اُنھیں کا تذکرہ ہے اور میں ہوں

    -------
    خان اخترندیمؔ نقشبندی
    مجموعہ نعت ﷺ ("ساقئی کوثر")
    صفحہ نمبر۔109

     

Share This Page