Others جو وصفِ عشقِ محبوبِ خدا سے متصف ہوگا

Discussion in 'اردو شاعری' started by intelligent086, Apr 6, 2019.

  1. intelligent086 FK Lover FK Lover Member Of The Month

    Messages:
    22,556
    Likes Received:
    2,639
    Trophy Points:
    98



    جو وصفِ عشقِ محبوبِ خدا سے متصف ہوگا

    زمانہ اس کی خوش اخلاقیوں کا معترف ہوگا


    خیالی نقش جو میں نے بنا رکھے ہیں ان سب سے

    نہ جانے روضۂ سرکار کتنا مختلف ہوگا


    بغیر ان کی محبت کے عمل سب نامکمل ہیں

    معمہ خلق پر یہ حشر کے دن منکشف ہوگا


    گزر جائے گا اس کا ایک اک لمحہ عبادت میں

    تری یادوں کی مسجد میں اگر دل معتکف ہوگا


    ثنائے مصطفیٰ میں ایک اک حرف اب کے سجدہ ریز

    الف تا یا کبھی ہوگا کبھی یا تا الف ہوگا


    وہ فاضل پیش قدمی سوئے جنت کر نہیں سکتا

    جو اولادِ نبی کی عظمتوں کا منحرف ہوگا


    از : فاضل میسوری
     

Share This Page