Ghazal بابا کی آن واسطے اور اس کے مان پر

Discussion in 'FK Poet Club' started by محمد قمر شہزاد آسی, Oct 7, 2017.

  1. محمد قمر شہزاد آسی

    Messages:
    8
    Likes Received:
    7
    Trophy Points:
    0
    بابا کی آن واسطے اور اس کے مان پر
    جاتی ہیں کھیل بیٹیاں اپنی ہی جان پر

    کاٹا تھا جس نے میرے پروں کو فریب سے
    کرتا ہے رشک آج وہ میری اڑان پر

    جس نے بھی ہم کو واسطہ اس نام کا دیا
    ہم نے بھروسہ کر لیا اس کی زبان پر

    خوشیوں کا ایک پل بھی نہ داخل یہاں ہوا
    قبضہ اداسیوں کا ہے میرے مکان پر

    دل کو ہمارے آپ نہ پتھر کا جانیے
    اتنا ستم نہ کیجیے ننھی سی جان پر

    ترکش میں کافی تیر تھے باقی ابھی مگر
    یاروں نے ہاتھ رکھ دیا میری کمان پر

    بھاؤ گرے ہوئے ہیں وفاؤں کے اے قمرؔ
    چھائے ہوئے ہیں حسن کے جلوے جہان پر
    #قمرآسی
     
    Smile likes this.
  2. Smile Arshi Staff Member Moderator Jr.Designer

    Messages:
    1,595
    Likes Received:
    811
    Trophy Points:
    98
    bht umah ghxal zaberdssst kalaam.
    stay blessed.
     

Share This Page